موسم اچھا ہے !!!

سُرمئی بادلوں سے ڈھکا آسمان ۔۔۔ شرارت پہ آمادہ شوخ تیز ہوا ۔۔۔ کبھی کبھی بدلی کی اوٹ سے جھانکتے سورج سے ایسی زرد دھوپ پھیلتی ہے جیسے گیندے کے بہت سارے پھولوں کا عکس ہرے پتوں پہ پھیل گیا ہو ۔۔۔۔ جھومتے لہراتے درخت ۔۔۔ سبزے کے بیچ میں گرے ہوئے زرد پتے ۔۔۔۔۔۔ یوں لگتا ہے ساون کے مہینے میں بہار و خزاں سب موسم ساتھ مل گئے ہوں ۔۔۔ پون کا شور ۔۔۔ کوئل کی کُو کُو ۔۔۔ بادل ۔۔ ہوا … سب کچھ ہے کراچی میں ….. سوائے برستی بارش کے ۔۔۔۔۔۔
بارشوں کا موسم ہے
روح کی فضاؤں میں
غم زدہ ہوائیں ہیں
بے سبب اداسی ہے
ان گنت فسانے ہیں
جو بہت خموشی سے
دل پہ سہتے پھرتے ہیں
اور یہ امرِ مجبوری
سب سے کہتے پھرتے ہیں
آج موسم بہت اچھا ہے
آج ہم بہت خوش ہیں ۔۔۔۔۔۔

Advertisements

1 تبصرہ »

  1. پھر ساون رت کی پون چلی۔۔۔
    تم یاد آئے۔۔۔
    پھر پتوں کی پازیب بجی۔۔۔
    تم یاد آئے۔۔۔

    پھر کونجیں بولیں گھاس کے ہرے سمندر میں۔۔
    رت آئی پیلے پھولوں کی۔۔۔
    تم یاد آئے۔۔۔

    پہلے تو میں چیخ کے رویا، پھر ہنسنے لگا۔۔۔
    بدل گرجا، بجلی چمکی۔۔۔
    تم یاد آئے۔۔۔

    پھر کاگا بولا گھر کے سونے آنگن میں۔۔۔
    پھر امرت رس کی بوند پڑی۔۔۔
    تم یاد آئے۔۔۔

    دن بھر تو میں دنیا کے دھندوں میں کھویا رہا۔۔۔
    جب دیواروں سے شام ڈھلی۔۔۔
    تم یاد آئے۔۔۔


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: