اِک کمی سی رہ گئی ۔۔۔

یہ عنوان سعداللہ شاہ کے مجموعے کا ہے ۔۔۔ سعد اللہ کی زندگی میں کوئی کمی رہی ہوگی انہوں نے اشعار لکھ ڈالے ۔۔۔۔۔ کل مجھے جھاڑو دیتے ہوئے خیال آیا 10 دن ہونے والے ہیں کچھ نہیں لکھا ۔۔۔۔۔۔ یوں محسوس ہوا جیسے کچھ کمی سی رہ گئی اور اس حوالے سے مجھے سعد اللہ شاہ یاد آگئے ۔۔۔۔
بلاگرز کے انٹرویو میں شائد منظر نامہ میں پڑھا تھا بلاگنگ عادت بن جاتی ہے ، نشہ ہے ایک طرح کا ۔۔۔۔ اس وقت میں نے دھکّا سٹارٹ بلاگ لکھنا شروع کیا تھا ۔۔۔۔ عادت ، نشہ جیسی بات پڑھ کے سوچا تھا ایویں فضول کی باتیں سب ۔۔۔۔۔ لیکن کل میری سوچ غلط ثابت ہوئی ۔۔۔ بلاگ پہ کچھ نا کچھ لکھتے رہنا عادت بن گئی ہے ۔۔۔۔ کچھ عنوانات ذہن میں تھے لیکن مصروفیت کچھ ایسی رہی اور ہے کہ سب گڈ مڈ ہوکے گڑ بڑ گُھٹالا بن گیا ۔۔۔۔۔ کل بہت سوچنے کے بعد ایک عنوان یاد آیا کہ لکھنا کیا تھا ۔۔۔۔۔ وہ پھر سہی فی الحال تو دسمبر کے دس دن باقی ہیں ۔۔۔۔ دسمبر کی دھوپ میں بیٹھنے کا شوق تو پورا کر لیا لیکن وہ اون کا گولا جو بڑے چاؤ سے منگوایا تھا الماری میں پڑا یقیناً افسردہ ہوگا کہ میرے ہاتھ پہ الجھ کے لپٹ کے ایک حسین شاہکار بننے سے رہ گیا 😛
کل رات سے ٹھنڈی ہوائیں چل رہی ہیں دسمبر خوبصورت لگ رہا تھا ۔۔۔ دل چاہا ابرار کا بھیگا بھیگا دسمبر سنوں یا عامر سلیم کا سہانی شام ، ساتھ کافی کے مزے لوں ۔۔۔۔
لیکن آج دسمبر گیا بھاڑ میں ۔۔۔۔۔ دل چاہا پتھراؤ شروع کردوں 😦 پتھراؤ تو نہیں کیا لیکن جو چیز بے جگہ نظر آئی اس کو ٹھکانے لگایا ۔۔۔۔۔ دو چمچے پھینکے جو بعد میں خود میں نے اٹھائے ۔۔۔۔۔۔۔
وجہ ۔۔۔۔۔۔ گیس پریشر کی کمی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ روٹی کی جگہ پاپڑ بنائے ۔۔۔۔ کھچڑی بنانے کی کوشش کی لیکن آنچ کم ہونے کی وجہ سے دال گلنے سے انکار کرکے اکڑ گئی ۔۔۔۔۔ اب میں نے ارادہ کر لیا جس دن سی این جی بند ہوگی اس دن کھانا رات میں ہی بنا لوں گی ۔۔۔۔۔۔۔ منحوس حکمراں گیس پی گئے ۔۔۔۔۔ بجلی کھا گئے ۔۔۔۔۔۔ پاکستان میں کچھ بچا ہی نہیں عوام کے سِوا ۔۔۔۔۔۔۔

10 تبصرے »

  1. بس مجھے بھی یہی تاو ہے۔
    یہ منحوس حکمران سب کچھ کھا گئے۔
    گیس بجلی پانی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    بس عمران کی کرسیاں عوام لے اڑے۔۔۔
    باقی بچی بس اکیلی حجاب۔۔۔۔
    ایک کرسی ہی اٹھالاتیں!

  2. بلاگنگ واقعئی چھڑائے نہین چھٹتی۔۔۔ لگ جاتی ہے یہ۔

  3. rubinaansari Said:

    ارے یہ کیا لکھ دیا اس دکھ میں تو ہم سخت سرد علاقے کے لوگ گزر رہے ہیں جہاں اتنی شدید سردی ھے اور نہ گیس ھے نا بجلی تھوڑی دیر کیلیے جھلک دیکھانے آ جاتی ھے،اس وقت بھی جو لکھ رہی ہوں تو ہاتھ سخت ٹھنڈے ہیں،کل سے پانی نہیں تھا ابھی ٹینکر ڈالوایا ھے،یہ کیسا ملک ھے جہاں ھم بیسک سہولتوں سے محروم ہیں، ان مسٰایل سے نظر ہٹے تو ھم خوبصورت دسمبر اینجواٰے کریں
    منحوس حکمران تو یہ سوچ رھے ھونگے کے عوام کیسے بچے ھویے ہیں کیونکہ یہاں کی ہر چیز تو خواص کے لیے ھے-
    شاٰید ان مساٰیل میں عوام کو اسی لیے ڈالا ھوا ھے کےوہ ان مساٰیل میں گرفتار رھیں تاکہ خواص کے معاملات میں دخل اندازی نہ دے سکیں-

    اب تو گھبرا کے یہ کہتے ہیں کے مر جاٰییں گے
    مر کے بھی چین نہ پایا تو کدھر جاییں گے-

  4. فکر نہ کریں جی، خبر ملی ہے کہ گیس موسمِ سردہ میں دو ماہ کیلئے مکمل بند۔۔۔۔۔ آہاہا۔۔۔ پاکستان کھپے کا نعرہ لگانے کا جی چاہتا ہے

  5. Rizwan Said:

    جھاڑو دیتے دیتے کیا انقلابی نظریات کی آمد ہوئی ہے۔
    اس جھاڑو کا جو پرچم بنالیتیں تو اچھا تھا۔

    سچ یہ ہے کہ مشکلات حد سے بڑھ گئیں ہیں۔

  6. تصیح ۔۔۔ معزرت۔۔۔۔
    موسمِ سردہ میں دو ماہ کیلئے سی این جی کی بندش۔۔۔۔

    میرا ایک دوست لاہور کے مضافات میں کسی دیہات میں رہائیش پزیر ہے۔ بقول اُسکے دِن میں فقط دو سے تین گھنٹے بجلی آتی ہے۔ وہ ورچوئل یونیورسٹی کا طالب علم ہے لہٰذا آن لائن اسائنمنٹس اور سٹڈیز تو اُسکے لئے ناممکن ہوگئی ہے۔ بس اللہ ہی رحم کرے ہمارے حالوں پر

  7. hijabeshab Said:

    سب کے تبصروں کا بہت شکریہ ۔۔۔

  8. یہ پوسٹ تھوڑی انقلابی انقلابی نہیں ہوگئی؟😛
    چیزیں پھینکنے پر یہ جملہ سننے کو تو نہیں ملا تھا کہ سب کچھ اٹھاکر باہر پھینک دو😀

  9. hijabeshab Said:

    عمار یہ جملہ کہ سب اٹھا کے پھینک دو ، مجھے اکثر سننے کو ملتا ہے اور ساتھ یہ بھی کہ بعد میں خود اٹھا کے واپس رکھو گی ۔۔ اور انقلاب آنے والا ہے نا میں بھی کچھ حصّہ ڈالوں اپنا ، پوسٹ ہی سہی ۔۔🙂

  10. ہاہاہا۔۔ ہاں بالکل، تم بھی اپنا حصہ ضرور شامل کرلو ورنہ بعد میں افسوس ہوگا🙂
    یہاں بھی اگر باورچی خانے میں کسی چیز کے گرنے یا صرف کھنکھنانے کی آواز ہی کیوں نہ آئے، میری چھوٹی بہن آواز لگاتی ہے، اٹھاکر باہر پھینک دو😛


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: