چھنن چھنن ….

اس کی پائل اگر چھنک جائے
گردشِ آسماں ٹھٹھک جائے
عبدالحمید عدم نے یہ شعر ضرور اپنی محبوبہ کے لیئے کہا ہوگا ۔۔۔ لیکن آج کل پائل باجے تو راہ چلتے لوگ ٹھٹھک جاتے ہیں ۔۔۔ دروازے کھڑکیاں کُھلنے لگتی ہیں کہ کہیں سے نظر آجائے وہ شاہکار جو سجا سجایا جھومتا ہوا قربان ہونے کے لیئے آرہا ہے ۔۔۔۔ اور وہ اپنی دھن میں مگن جھانجھر چھنکاتا بے نیازی سے چلتا چلا جاتا ہے ۔۔۔۔ اور کبھی جو رسّی توڑ کے بھاگ نکلے ۔۔۔۔ سب لوگ مزہ لے رہے ہوتے ہیں لیکن صاحبِ جانور کا حال بے حال ہوتا ہے ، بس نہیں چلتا ان کا کہ کیسے گائیانہ اور بیلیانہ زبان میں اپنے فرار جانور کو آواز دے کے بُلا لیں ۔۔۔۔ بات ہو رہی تھی جھانجھر کی ۔۔۔۔
اس بار اب تک جتنے جانور میرے کانوں سے گزرے ۔۔۔۔ (میں دیکھنے کا شوق نہیں رکھتی) سب چھنن چھنن کرتے گزرے ۔۔۔ دیکھنے والوں نے بتایا کہ جانوروں کی جسامت کے ساتھ اس بار مقابلہء جیولری بھی ہے ۔۔۔۔ کسی کی بھوری ۔۔۔ رانی ۔۔۔ دلاری ۔۔ پیاری گائے ہو ۔۔۔۔۔۔۔ یا بھورا ۔۔ کالا ۔۔ چتکبرا بیل ، سب کا سولہ سنگھار کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی گئی ہے ۔۔۔ میں نے بھی اپنی کچھ جیولری نکال کے رکھی ہے ، آنے والے کو پہناؤں گی اگر اس کو اعتراض نا ہوا تو 🙂
قصہ مختصر آج کل چھنن چھنن کی آواز مستقل سن کر مجھے پائل خریدنے کا شوق ہوا ہے 😛 فی الحال تو مارکیٹ جانے کا ٹائم نہیں ۔۔۔۔ دیکھنا یہ ہے کہ بقرعید کے بعد یہ شوق برقرار رہتا ہے یا نہیں ۔۔۔۔۔۔

15 تبصرے »

  1. مجھے یہ پڑھ کے عجیب سا احساس ہو رہا ہے کہ یہ جانور کیسے سر تسلیم خم کیۓ قربان ہو جاتے ہیں اور ایک ہم انسان ہیں کہ اللہ کے آگے اک سجدہ کرتے ہوۓ بھی جان جاتی ہے ہماری اور مال کے جانے کا بھی اندیشہ ہوتا ہے۔ اللہ ہی ہمیں ہدایت دے- آمین

    ویسے ہمیشہ کی طرح آپ کی ہلکی پھلکی تحریر حسب حال اور بر موقع پڑھ کے اچھا لگا۔ اللہ کرے زور قلم اور زیادہ

    • لالا جی Said:

      یونہی خیال ذہن میں آیا…آپ کیسے کہ سکتے ہیں کہ جانور سر تسلیم خر کئے قربان ہو جاتے ہیں؟ ان بے چاروں کو کیا پتہ کہ ان کے ساتھ کیا ہونے والا ہے؟

      • علم کا متلاشی Said:

        آپ پہلے حصے کو چھوڑ کے دوسرے پہ غور کر لیں تو شاید اس سوال کی ضرورت نہ پیش آۓ۔ میں نے تو بس یہ سوچا تھا کہ ہمیں ھر حال میں اللہ کا شکر ادا کرتے ہوۓ اس کی عبادت کرنی چاہیۓ۔ شکریہ آپ کے کمینٹ کا

  2. آنے والے کو کیا پہنائیں گی؟
    چھرا ، تلوار یا پھر کلاشنکوف پہنا دیں۔
    سیخوں کا زیور تو بیچارا پہنے گا ہی۔

  3. جعفر Said:

    چلیں چھوڑیں

  4. اپنی جیولری بکرے کو پہننانی ہے ؟ یا بکرے کے لیے اسکی مخصوص جیولری ہے ؟

  5. کافی سالوں سے اپنے ملک میں عید قربان نہیں دیکھی۔ انشاءاللہ اگلے سال بقر عید پر جانے کا پروگرام ہے۔ تب جانوروں کی چھنا چھن سننے کو ملے گی۔

  6. عثمان Said:

    پائل چھوڑیں , چوڑیاں پہنیں۔ لڑکیوں پر سجتی ہیں 🙂

  7. شعر پڑھ کر تو ميں ٹھٹھک گيا تھا ۔ خير ہوئی جو قربان ہونے والے جانور کا ذکر نظر پڑھ گيا ۔ ويسے يہ بھی درست ہے کہ پائل چھنکانے والی بھی تو قربان ہونے کی تياری ميں ہوتی ہے

  8. hijabeshab Said:

    بہت شکریہ علم کا متلاشی ۔۔۔

    یاسر آنے والے کو لاکٹ پہناؤں گی ۔۔ سیخوں میں تو وہ بعد میں لگے گا ۔۔۔

    جعفر آپ سے گفٹ کون لے رہا ہے 😛

    انکل ٹام ، جی اپنی وہ جیولری جو میرا بھائی مجھے لا کے دیتا ہے وہ گائے کو پہنانے والے لاکٹ اور بریسلیٹ ہی لگتے ہیں مجھے عجیب سے سب جمع کی ہوئی ہیں میں نے وہ پہناؤں گی 🙂

    ڈاکٹر جواد وہاں پہ بکرے کو کچھ جیولری پہنا دیا کریں خوش ہو جائے گا بکرا ۔۔۔

    عثمان ، اب تو پائل کا شوق ہوا ہے کیسے چھوڑوں ۔۔۔۔۔۔

    اجمل انکل پائل پہننے کا مطلب قربان ہونا ہوتا ہے کیا ۔۔۔ 🙄

  9. حجاب ہر کسی کی مشابہت اختیار نہیں کرتے۔۔۔۔۔ ضروری نہیں جو چیز کسی پر سجے وہ ہم پر بھی سجے۔۔۔ :ڈ

  10. Saqib Shah Said:

    عید قربان گزر چکی ہے۔ آپ گھر کی جم کے صفائی کرلیں۔
    http://www.colourislam.blogspot.com/

  11. Saqib Shah Said:

    اب عید گزر چکی ہے جم کر صفائی کرلیں۔
    http://www.colourislam.blogspot.com/


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: