اُففففففففففف ۔۔۔

ہر وقت لڑائی ، تنقید ، ایک دوسرے کو برے القابات سے نوازنا ، بدتمیزی سے بات کرنا ۔۔۔۔۔ توبہ سر گھوم گیا میرا ۔۔۔۔ جب دیکھو بحث بحث ۔۔۔ کبھی مذہب پہ ۔۔۔ کبھی سیاست پہ ۔۔۔ کبھی کچھ نہ ہو تو خود سے اینٹ مار کے لڑائی کر لینے میں بھی برائی نہیں 😦
مذہب ہر شخص کا ذاتی معاملہ ہے ، اگر کسی کو کسی پر اعتراض ہو ، وہ چاہتا ہے سامنے والا اسکی بات مان لے ۔۔۔ جب کہ وہ خود جانتا ہے کہ وہ اپنی بات پر قائم رہے گا تو دوسرے کو اس کی مرضی کیوں نہیں کرنے دی جاتی ۔۔۔ میں مذہب کے معاملے میں کسی کی کوئی بات کبھی نہیں سنتی نہ دوسرے کو کچھ کہتی ہوں ۔۔۔ لوگ پتہ نہیں ایسا کیوں نہیں کرتے 🙄
مذہب ہو یا کوئی بھی بات ہر شخص کی اپنی رائے ہوتی ہے جس کو وہ ٹھیک سمجھتا ہے ۔۔ تو بلاوجہ کیوں اپنی مرضی تھوپ کے لڑتے ہیں لوگ 😕

Advertisements

39 تبصرے »

  1. حِجاب کیا کرُوں آجکل تو لِکھ لِکھ کر مِٹا تو خیر نہیں رہی مگر ڈھیر لگا دیا ہے لِکھ کر کُچھ پتہ نہیں کہ کیا لِکُھوں کہ کِسی کو اِعتراض نا ہو ،،،
    ہم نے تو اپنے دِل کی کہنے کے لِئے بلاگ بنایا تھا کیا جانتے تھے کہ ہمارے دِل کی کہی کِسی کی بھی دِل لگی بن سکتی ہے کِسی بھی بات پر جو عام سی بات ہو کِسی کو بھی خاص لگ کر ٹھاہ کر کے لگ جائے برداشت کی کمی کیُوں ہو گئ ہے ہم لوگوں میں ہنسنے والی بات پر بھی رونا شُرُوع ہو جاتے ہیں نا کیا کریں پلیز ایسا،،،،
    چھوٹی سی زِندگی ہے ہنس بول کر وقت گُزاریں خُوشیاں بانٹیں ،،،کیا فائِدہ وجہ کیا بِلا وجہ ہی بِھڑ جانا،،خُوش رہیں بس،،،

  2. اب اس پوسٹ پر بھی بحث شروع ہو جائے گی۔۔۔ ہا ہا ہا

  3. جی نعیم لگتا تو کُچھ ایسا ہی ہےعادت سے مجبُور ہیں ہم لوگ کیا کریں اب؟؟؟؟؟

  4. Asma Khan Said:

    sahi kah rahi hain, kaj bahsi hamara mamool ban gaee hai

  5. کیا ہوا بٹیا رانی؟ 🙂

  6. Jafar Said:

    وہ شعر نہیں سنآپ نے؟
    پلٹنا جھپٹنا والا
    جس میں شاعر فرماتا ہے کہ لہو گرم رکھنے کا بھی تو کوئی بہانہ ہونا چاہیے۔۔۔۔

  7. کیا ہوا؟
    کون لڑ رہا ہے۔
    بڑے خراب لوگ ہیں۔یہ لڑنے کاٹنے والے۔
    میں آپ کے ساتھ ہوں۔آپ کسی سے نہ لڑیں۔۔۔۔۔۔لیکن آُ لکھتی اتنا پیارا ہو۔
    کوئی آپ سے کیوں نہیں لڑتا؟
    بارہ سنگھے کی بات ہے تو وہ جھاڑیوں میں بھی سینگ پھیسا لیتا ہے۔
    بحرحال لڑنا بہتر ہی غلط بات ہے۔
    اچھے بچے لڑائی نہیں کرتے۔

  8. لڑائی کی وجہ يہ سوچ ہے کہ "جو ميں ہوں يا ميں جانتا ہوں وہ دوسرا نہيں ہے يا دوسرا نہيں جانتا ہے” اور اس کا نتيجہ ميں اپنی سوچ دوسرے پر تھوپی جاتی ہے

    اگر اصلاح مقصد ہو تو بات کرنے يا سمجھانے کا طريقہ عاجزانہ اور مشفقانہ ہوتا ہے ۔ دھونس کا نہيں ہوتا

    مذہب ميں کچھ معاملات ذاتی ہيں اور کچھ اجتماعی ۔ کوئی کتنا صدقہ ديتا ہے ذاتی معاملہ ہے بلکہ بغير ظاہر کئے صدقہ دينا بہتر ہے ۔ باجماعت نماز اجتماعی معاملہ ہے ۔ انصاف ۔ رواداری ۔ خوش اخلاقی ۔ لين دين ميں سچ اور حق کا خيال ۔ بات چيت ميں شُستگی اور سچ کا لحاظ وغيرہ بھی اجتماعی معاملات ہيں ۔ اسلئے مذہب ذاتی معاملہ نہيں رہتا ۔

  9. کون چھیڑ رہا آنٹی کو تیزابی کہہ کت اور کون انکی روشن خیالی کو کچھ کہہ ۔۔۔۔۔۔۔ اور کون انکے حواری بارہ سنگھے کو کچھ کہہ ۔۔۔۔۔ وہ تو بے نتھے بیل ہیں تو ہم بھی کچھ کم نہیں ۔۔۔۔۔ یہ فارمولا لگ رہا ہے ہر جگہ

  10. کاش کہ یہ معاملہ اتنا سیدھا اور آسان ہوتا اور ہم بھی یہ کہتے کہ دفع کر یار …ہمیں کیا …

  11. میرا خیال ہے خاموشی ہی اختیار کی جائے تو بہتر ہے
    اور یاسر بھائی آپ نے بارہ سنگھے کا ہر جگہ ذکر کر کے نجانے کیا حال کر دیا ہے کبھی تو اس بچارے کو چھوڑ دیا کریں 🙂

  12. ویسے میں خرم ابن شبیر بھائی سے متفق ہوتا جا رہا ہوں آہستہ آہستہ۔۔۔ کہ جو لغو الفاظ استعمال کرتے ہیں۔۔۔ انہیں مستقل طور پر نظر انداز کرنا ہی بہتر ہے۔۔۔ کیوں اور کب تک خود کو کھپاتے رہیں گے ہم۔۔۔ انہوں نے تو سدھرنا ہی نہیں۔۔۔ اس لیے خاموشی ہی بہتر ہے۔۔۔ ان کے بارے میں بات کر کے اپنی زبان ہی گندی کرنی ہے نا ہمیں، تو خاموش رہ کر کم از کم ہم اپنی زبان اور دماغ کو گندا ہونے سے بچا لیں گے۔۔۔

  13. hijabeshab Said:

    شاہدہ آپی آپ اپنے دل کی بات ضرور لکھا کریں ڈرتی ہیں آپ ؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟

    نعیم ، بحث شوق سے شروع ہوجائے مجھے پرواہ نہیں ۔۔ میرے ذہن میں جو بات آئی لکھ دی ۔۔

    بلاگ پر خوش آمدید اسماء اور شکریہ ۔۔۔

    سعود بھیّا ، سر گھوم گیا تھا تو سر کا علاج پوسٹ لکھ کے کیا 🙂

    جعفر ، لہو گرم رکھنے کا کوئی دوسرا طریقہ ؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟

    یاسر ۔۔۔ مجھ سے کوئی نہیں لڑ رہا ، میں کسی کو کچھ کہتی نہیں تو مجھ سے کون لڑے ۔۔۔ ہاں بلاوجہ مجھ سے اگر لڑائی کرنا چاہے کوئی تو فرصت کے لمحات میں میرا وقت یہی سوچنے میں گزرتا ہے کہ اب کون سا نیا طریقہ ہو تنگ کرنے کا 😛

    اجمل انکل لڑائی کی وجہ آپ نے ٹھیک لکھی ۔۔ اور واقعی اگر بات کو ٹھیک سے سمجھا کے کیا جائے تو اصلاح ہوسکتی ہے ۔۔ دھونس سے تو کوئی بات نہیں مانتا ۔۔

    ضیاء الحسن 🙄

    ڈاکٹر جواد ، میں نے کسی خاص کے لیئے یہ سب نہیں لکھا ۔۔ بس ہر وقت بحث بحث ، چھوٹی سی بات پر اس قدر لڑنا کہ نفرت کی آخری حد لکھے ہوئے لفظوں میں نظر آنے لگے یہ سب پڑھ پڑھ کے دماغ کی لسّی بن گئی ۔۔

    خرم ٹھیک لکھا آپ نے خاموشی ہزار نعمت ہے 🙂

    عمران ، یہاں بات کسی ایک کی نہیں ہو رہی ۔۔ ہم سب بھی کسی سے کم نہیں رہنا چاہتے ۔۔ جبھی تو بحث ہوتی ہے ۔۔ بحث ، لڑائی میں بھی کرتی ہوں مگر کچھ دیر اس کے بعد یاد ہی نہیں رہتا کہ کیا ہوا تھا ۔۔ لڑائی ہو مگر نفرت کی حد تک تو نہ جائے بات ۔۔ بس یہی کچھ پڑھتے پڑھتے لکھ دی یہ پوسٹ ۔۔

  14. ABDULLAH Said:

    اختلاف رائے پر لوگ ساری حدود اور قیود بھلا کر بدتمیزی پر اتر آئیں تو انہیں تھوڑا بہت سبق سکھانا ضروری ہوتا ہے،
    میں کبھی کسی خاتون سے بدتہزیبی سے بات نہیں کرتا خواہ مجھےان کی بات کتنی ہی بری کیوں نہ لگی ہو،لیکن یہاں موجود تہذیب کے ٹھیکے داروں کا یہ حال ہے کہ اختلاف رائے پر ساری حدیں کراس کر کے ذاتیات اور گندی گندی گالیوں پر اتر آتے ہیں اور اس میں مرد اور عورت کا لحاظ بھی بھول جاتے ہیں،
    پھر کچھ کہو تو بیچ میں اسلام اٹھالاتے ہیں،
    جب اپنی دم پر پیر پڑتا ہے تو ساری اخلاقیات یاد آنا شروع ہوجاتی ہیں اس کو آپ کیا کہیں گی؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟

  15. جعفر Said:

    لہو گرم رکھنے کا دوسرا طریقہ ہے شکار
    اور وہ بھی اگر بارہ سنگھے کا ہو تو۔۔۔

  16. Aniqa Naz Said:

    میں تو ایک ہی چیز دیکھنے آئ تھی۔ اچھے بچوں کی حاضری۔ اطمینان رہا ، پوری ہے۔ جاتی ہوں۔ اچھے بچے تمیز سے بیٹھے ہیں، میں ہی کچھ ہلچلی کروں۔

  17. hijabeshab Said:

    عبداللہ ، تالی کبھی ایک ہاتھ سے نہیں بجتی ۔۔۔

    جعفر ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    انیقہ ، میں نے آپ کو اپنے بلاگ کی تفتیش کرنے کے لیئے کب کہا ؟؟؟ پھر یہ بتانے کی کیا ضرورت کہ آپ کس لیئے تشریف لائی تھیں ؟؟؟؟؟

  18. سلام
    شاہدہ آپی زندگی کا رنگ ہی اس نوک جوک میں ہے ہاں لیکن ایک بات نوک جوک مہذب پر نہیں ہونی چاہئیے

  19. Aniqa Naz Said:

    ہائیں، یہ میں نے کب کہا کہ میں نے یہ تفتیش آپکے کہنے پہ کی ہے۔ اگر ان جملوں سے ایسا کوئ تائثر ابھرا تو میری زبان کی غلطی۔
    سواءے آپکے باقی سب کو اندازہ ہو گا کہ یہ میں نے خود اپنے نفس کی پیروی میں کی تھی۔

    • چھڈو جی۔۔۔۔

    • انیقہ۔۔۔ نفس کنٹرول میں رکھیں گی تو جنت جائیں گی۔۔۔ ورنہ وہاں سفارشی کم ہی ملیں گے۔۔۔ اور جو آپ کے ہمنوا ہیں ان کے بارے میں اللہ ہی جانتا ہے۔۔۔ کہ مقام کیا ہوگا۔۔۔

      • ABDULLAH Said:

        اس نصیحت پر خود عمل کرنے کا کب تک ارادہ ہے؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟

      • عبداللہ، بہت جلد۔۔۔ انشااللہ۔۔۔ ویسے کیا آپ انیقہ ہیں؟

      • ABDULLAH Said:

        @عمران اقبال،
        جلدی عمل کر لیں ذندگی کا کوئی بھروسہ نہیں ہوتا

  20. خواتین و حضرت !
    التماس صرف اتنی ہے کہ چاہے جتنی بھی منہ ماری اور تلخی ہو،کوئی بھائی عبداللہ کو کوئی نہ چھیڑے اور اگر چھیڑنا اتنا ضروری ہے تو انہیں سینگ والوں سے نہ ملایا جائے ( سینگ والے برا مانتے ہیں )

    • "سینگ والے برا مانتے ہیں۔۔۔”۔۔۔ ہا ہا ہا ہا۔۔۔ ڈاکٹر صاحب۔۔۔ تسی چھا گئے ہو۔۔۔ سواد آگیا بادشاہو۔۔۔

  21. hijabeshab Said:

    وسیم بیگ وعلیکُم السّلام ۔۔۔

    انیقہ ، آپ کا وضاحتی بیان ہی ایسا تھا کہ مجھے تفتیش والا سوال کرنا پڑا ۔۔۔ اور غلطی زبان کی نہیں ، دماغ اور ہاتھ کی ہوئی ۔۔ دماغ نے سوچا ہاتھ نے ٹائپ کیا ۔۔۔ غلطی تسلیم کرنے کا شکریہ ۔۔

  22. ABDULLAH Said:

    بزرگ کہتے ہیں،جو بدتمیزی میں پہل کرے وہی اصل فسادی ہے!!!

    • پھر سے وہی غوں غاں۔۔۔ جہاں آپ ہوتے ہیں فساد وہیں کیوں ہوتا ہے جناب۔۔۔؟ کبھی محسوس کریں خاموشی سے کہ جہاں آپ موجود نہیں۔۔۔ وہاں صرف محبت، پیار اور سکون کی بانسری بجائی جاتی ہے۔۔۔

      ۔۔۔ وجود بارہ سنگھا سے ہے دنیا میں فساد۔۔۔

      • ABDULLAH Said:

        اس کی وجہ یہ ہے کہ سچ آپ حضرات کو ہضم نہیں ہوتا،اور جو سچ بولے آپ سب مل کر اس پر چڑھائی کرنا اپنا فرض اولین سمجھتے ہیں پھر سامنے والا بھی ہاتھ میں کی بورڈ رکھتا ہے یوں آپ حضرات کی غوں غون غاں غاں اور ہماری چچ چچ چچ شروع ہوجاتی ہے!

      • ویسے تصویر بڑی پپو لگائی ہے آپ نے اپنے نام کے ساتھ۔۔۔

      • ABDULLAH Said:

        یہ تصویر بلو بلا کی مہربانی ہے ،میری چوائس نہیں!

  23. ڈفر Said:

    میں نے سنا توشہ شوبہ ہوری یہاں
    سو حاضری لگوانے پہنچ گیا


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: