الوداع !!! امن ایمان ۔۔۔

صبح جب آنکھ کھلتی ہے تو سب سے پہلے سائیڈ میں پڑا موبائل اُٹھا کر دیکھتی ہوں کہ کتنے ایس ایم ایس منتظر ہیں کہ مجھے پڑھو ۔۔۔ آج صبح اچھے خاصے ایس ایم ایس تھے ۔۔۔ اُس میں ایک ” امن ایمان “ کا بھی تھا ۔۔۔
امن ، نے لکھا کہ اُس کے “ سجن پردیسی “ خیر سے مستقل پاکستان آگئے ہیں ۔۔ اس لیئے اب “ امن “ کے لیئے بلاگ لکھنا یا انٹرنیٹ استعمال کرنا ممکن نہیں ہوگا اب صرف گھرداری ، میاں جی اور ننّھی پری کا خیال رکھنا ہے 😦 مگر میں پُر امید ہوں امن ۔۔۔ کبھی نہ کبھی تم ضرور بلاگ لکھنا بڑھاپے میں لکھ لینا مگر لکھنا پلیز 🙂
امن نے مجھ سے فرمائش کی کہ وہ آج کل بہت مصروف ہے اس لیئے میں اُس کا بلاگ ڈی ایکٹیویٹ کردوں ۔۔۔۔ امن تمہاری فرمائش پوری کردی ، امن کی طرف سے سب کو سلام اور خوش رہنے کی دعا ۔۔ امن کو بھی دعا میں یاد رکھیں ۔۔
امن ، ہمارا رابطہ تو رہے گا ۔۔۔۔ مگر میں تمہارے تبصرے اپنے بلاگ پر ہمیشہ مِس کروں گی 😦
ہر خوشی ہو وہاں
تو جہاں بھی رہے
زندگی ہو وہاں
تو جہاں بھی رہے
روشنی ہو وہاں
تو جہاں بھی رہے ۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

Advertisements

21 تبصرے »

  1. بڑا عجیب لگا امن اپیا یہ پڑھ کے۔ مطلب آپ اردو محفل پہ بھی نہیں آئیں گی! یہ تو زیادتی ہے نا:(

  2. ایسا اگر واقعی ہی ہوگیا ہے تو اچھے ہی کیلئے ہی ہوا ہوگا جی ۔

  3. 🙂
    😦

  4. مکی Said:

    گھر زیادہ ضروری ہے بلاگنگ تو کرتی ہی رہیں گی.. اللہ خوش رکھے..

  5. گرہستی اولین ترجیح ہے۔ 🙂

  6. tehreemtariq Said:

    apna Khayal rakhye ga Aman ji

  7. Aniqa Naz Said:

    واللہ مجھے سمجھ نہیں آیا کہ گرہستی کا بلاگنگ سے کیا تعلق ہے۔ شوہر صاحب کے واپس آنے سے زندگی میں آسانی آئ ہوگی۔ ویسے بھی انکی بلاگنگ کی رفتار نہ ہونے کے برابر ہی تھی۔ اس رفتار سے تو زندگی میں بلاگنگ کے ساتھ بہت سارے مزید کام کئے جا سکتے ہیں۔
    میرا خیال ہے کہ امن نے یہ بہانہ ڈھونڈا ہے۔ سو میں یہ بالکل نہیں کہونگی کہ گرہستی اولین ترجیح ہے۔ اگر انسان کسی چیز کا شوق کرتا ہے تو وقت کو بہتر طریقے سے استعمال کرنے کا ہنر بھی سیکھتا ہے۔ زندگی میں جتنی چیزیں چھوڑتی جائیں اتنی آسان زندگی گذارنے کی عادت پڑتی جاتی ہے۔
    انہیں چاہئیے کہ شوہر صاحب کے آجانے کے بعد، اپنی بلاگنگ کے نئے اوقات اس طرح مقرر کریں کہ یہ باقی چیزوں سے ٹکراءو کی حالت میں نہ ہوں ۔ ہم مشینی دور میں رہتے ہیں گرہستی میں بھی بہت سی آسانیاں مشینیں پیدا کر دیتی ہیں۔ کچھ آسانیاں جوائینٹ فیملی کی وجہ سے بھی آتی ہیں۔ مثلاً بچے دوسروں کے ساتھ بھی وقت گذارتے ہیں۔
    مجھے امید ہے کہ اگر انہیں بلاگنگ کا شوق ہے تو وہ اپنے شوہر سے بات کر کے ہفتے میں ایک چھوٹی موٹی چیز لکھ لیا کریں۔ اس پہ بمشکل ایک گھنٹہ خرچ ہوگا۔ پھر روزانہ پندرہ منٹ اسکے تبصرے چیک کر لیں۔ اللہ اللہ خیر صلا۔

    • ہم عموماً صفائیاں نہیں دیتے لیکن آپ نے ہمیں یا بالفاظ دیگر ہمارے ایک لفظ "گرہستی” کو کچھ اس انداز میں گھسیٹا ہے کہ ہمیں بغلیں جھانکتے بھی نہیں بنتی۔

      ہم آپ کی تحریروں اور خیالات کو پسند کرتے ہیں گو کہ کبھی کبھار آپ سے کلی یا جزوی طور پر اختلاف بھی رکھتے ہیں۔ لیکن اس سے ہمارے دل میں آپ کے مرتبے اور احترام میں کوئی فرق نہیں آتا۔

      ہمارا مختصر سا پیغام "بابل کی دعائیں لیتی جا۔۔۔” جیسا کوئی الوداعی کلمہ نہیں تھا بلکہ یہ ہم اکثر موقع محل کی مناسبت سے استعمال کرتے رہتے ہیں۔ ہم تو خود اس بات سے نالاں ہیں کہ کم از کم بلاگنگ کچھ عرصہ کے لئے معطل کر دیتیں تو پچھلا بلاگ قابل رسائی تو رکھتیں کہ لوگ ان کے خیالات سے مستفید ہو سکتے۔ لیکن یہ امن بٹیا کی اپنی مرضی ہے۔ اور یہاں ہمارے لکھنے کا محض اتنا سا مقصد تھا کہ ہمیں اس بات کی اطلاع موصول ہو گئی ہے کہ امن بٹیا کا بلاگ پھر منظر سے غائب ہو گیا ہے لہٰذا اس کو ماورائی فیڈر سے بھی خارج کر دیا جائے۔ لوگ عموماً ماورائی فیڈر میں شمولیت کی درخواست تو دیتے ہیں پر سائٹ معطل ہونے پر اس کو خارج کرنے کی درخواست آج تک کبھی موصول نہیں ہوئی۔ 🙂

      ویسے ممکن ہے آپ کی بلاگنگ کا تعلق گرہستی سے نہ ہو پر یہ بات سبھی پر لاگو ہو ایسا ضروری تو نہیں ہے ناں؟ اور پھر ترجیح کا یہ مطلب نہیں کہ کسی کام کو سرے سے ترک کر دیا جائے۔ بلکہ یہ تو ایسا آلہ ہے کہ ایک ہی وقت میں دو باتوں میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا پڑے تو استعمال کیا جاتا ہے۔ مثال کے طور پر ہم نے یہاں اسی وقت جواب لکھنا چاہا تھا جب آپ نے یہ تبصرہ کیا تھا پر اس وقت ہمارا ریسرچ پروجیکٹ ہمارے وقت پر زیادہ ترجیحی حق رکھتا تھا جس کے باعث یہ اب تک کے لئے معطل کرنا پڑا۔

      ویسے امن بٹیا رانی کے لئے آپ کا مشورہ ہمیں بھی انتہائی معقول لگا۔ لیکن اس پر وہ کیا فیصلہ لیتی ہیں یہ ان کی ترجیحات، طبیعت اور مرضی پر منحصر ہے۔

  8. hijabeshab Said:

    انیقہ ، امن کے ہسبنڈ کی طرف سے کوئی پابندی نہیں ۔۔۔ یہ امن کا اپنا فیصلہ ہے ۔۔

    • میں امن ایمان صاحبہ کی کمٹمنٹ سے نہایت متاثر ہوا. الله تعالیٰ انھیں ایمان ، صحت اور لمبی عمرکے ساتھ زندگی کی ہر خوشی عطا فرمائے…

  9. eaglesword2000 Said:

    ہماری انکے لیئے دعا ہے کہ وہ جہاں بھی رہیں خوش رہیں۔

  10. امن ایمان
    ہم سب آپ کو بہت میس کریں گے لیکن جہاں رہو خوش رہو آباد رہو آمین

  11. امن ایمان Said:

    عنیقہ آپ کی بات بالکل ٹھیک ہے۔۔۔آپ کی جگہ کوئی بھی ڈائنامک خاتون ہو۔۔۔وہ اسی انداز میں سوچے گی۔۔۔آپ کو شاید یاد ہو کہ نہیں میں نے آپ کے بلاگ پر ایک بار لکھا بھی تھا کہ آپ ٹائم مینجمنٹ کے بارے میں کچھ لکھیں۔شادی کے بعد مجھ سے ابھی تک سب کچھ ٹھیک سے مینج نہیں ہوتا۔

    آپ مجھے زیادہ نہیں جانتی ہیں۔۔۔بلاگنگ میں نے کافی دیر سے شروع کررکھی ہے اور میں بہت لکھتی تھی۔۔۔ یہ تو اب نورالعین کی وجہ سے لکھنا بالکل ہی کم ہوگیا۔۔اس کے علاوہ بہت ساری کمیونیٹیز کی ممبر بھی ہوں۔۔۔تو جو امن ایمان کو جانتے ہیں تووہ اُس سے وہی توقع رکھتے ہیں جیسی کہ وہ پہلے تھی۔۔۔لیکن میں اب حقیقی معنوں میں تھک گئی ہوں۔۔۔۔میں چاہتی ہوں میرا سارا وقت اور توجہ میری بیٹی کے لیے ہو۔۔۔اور یہ تبھی ممکن ہے کہ میں خود پر سےاضافی بوجھ ہٹا دوں۔

    باقی میرے پاس سسرال میں بھی انٹرنیٹ کی سہولت موجود ہے۔۔۔اگر کسی کا دل چاہے تو وہ ای میل بھیج کر میری خیر خبر دریافت کرسکتے ہیں۔۔۔آپ سب کی نیک تمناؤں کا بہت ،بےحد، بے شمار شکریہ 🙂

  12. امن ایمان Said:

    حجاب میرا میسنجر اب آپ ہیں۔۔۔۔: ) آپ کا بہت شکریہ۔۔اس پوسٹ کیے لیے۔: )

    فی امان اللہ 🙂

  13. Aniqa Naz Said:

    میں امن ایمان صاحبہ کی کمٹمنٹ سے نہایت متاثر ہوا. الله تعالیٰ انھیں ایمان ، صحت اور لمبی عمرکے ساتھ زندگی کی ہر خوشی عطا فرمائے…

    یعنی باقی تمام خواتین جو وقت نکال کر باقعدفی سے اپنے بلاگنگ کے شوق کو پورا کرتی ہیں وہ کمیٹڈ نہیں ہیں۔
    ہو سکتا ہے کہ امن کے پاس دیگر ایسی سرگرمیاں ہوں جنہیں بلاگنگ پہ ترجیح دی جا سکتی ہو۔ لیکن صرف بلاگنگ ایسی چیز ہے جو گھریلو مصروفیات کے ساتھ جاری رکھنے میں کوئ مسئلہ نہیں ہوتا۔
    اس کے لئے آپکو گھر سے باہر نہی جانا پڑتا۔ اس پہ پیسے نہیں خرچ کرنے پڑتے۔ کوئ اور تیاری نہیں کرنی پڑتی۔ نہ ہینگ لگے نہ پھٹکری۔ اسکے باوجود اگر لوگ کسی خاتون کے اس فیصلے پہ واہ واہ کریں اور متائثر ہوں تو دراصل یہ وہ لوگ ہیں جو کسی خاتون کی ساری صلاحیت صرف یہ سمجھتے ہیں کہ وہ گھر داری کرے۔
    حیرت ہے کوئ ایک شخص بھی ایسا نہیں جو یہ کہے کہ خاتون آپ اگر تھک گئ ہیں یا بلاگنگ سے بور ہو گئ ہیں تو الگ بات ہے۔ ورنہ اسے ترک کرنا ایسی کون سی خوبی ہے۔ کم از کم اسکے ذریعے آپ لوگوں کے ایک حلقے میں تو شامل تھیں۔
    یہ تو ایسے واہ واہ ہو رہی ہے جیسے امن پہلے نشہ پانی کرتی تھیں اور اب توبہ تلہ کر کے پھر سے شریف خاتون بن گئ ہیں۔
    یا بلاگنگ ترک کر کے وہ زیادہ اچھی بیوی یا ماں ثابت ہونگیں۔ یہاں ملک میں جو خواتین بلاگنگ کرتی ہیں وہ شاید سو دو سو سے زائد نہ ہوں۔ باقی سب کروڑوں کی تعداد میں نان بلاگر خواتین سے بھی یہ سب اسی طرح متائثر ہیں۔
    دلچسپ بات یہ ہے کہ جب خواتین سارا سارا دن ٹی وی پہ ڈراموں کی بارات دیکھتی رہیں یا خواتین ڈائجسٹ پڑھتی رہیں جو کہ اکثر گھریلو خواتین کرتی ہیں تو اس پہ کسی کو تشویش نہیں ہوتی کہ وہ اپنا وقت کس طرح ضائع کرتی ہیں۔ واہ واہ
    میرے نزدیک یہ امن کا ذاتی فیصلہ ہو سکتا ہے۔ اگرچہ کہ ہفتے میں ایک پوسٹ لکھ دینا کوئ مشکل کام نہیں۔ اس کے لئے بالکل ڈائینامک ہونے کی ضرورت نہیں ہوتی۔ ہر ہفتے نہ سہی پندرہ دن پہ کچھ لکھ لینا تو کسی گنتی میں نہیں آتا۔ صرف یہ کہ دماغ کو ذرا چست رکھنا پڑتا ہے کہ کیا اس پہ کچھ لکھا جا سکتا ہے۔
    مجھے امید ہے کہ وہ گرہستی کے ساتھ کچھ ایسے کام ضرور جاری رکھیں گی جن سے انکی قدرتی صلاحیتوں کو جلا ملتی رہے۔
    اور جلد ہی وہ اپنے اس فیصلے پہ نظر ثانی کریں گی۔ آپ شاید صرف سو پاکستانی خواتین میں شامل تھیں اور اپنے اس فیصلے کے بعد ان میں شامل نہیں رہیں گی۔

    • عنیقہ ناز صاحبہ،
      بات صرف اتنی ہے کہ امن ایمان کی گھر سے کمٹمنٹ قابل تعریف ہے .یہ کمٹمنٹ عورت اور مرد دونوں میں یکساں ہونی چاہیے. ہوسکتا ہے کہ آج انھیں بلاگنگ اعصاب پر بوجھہ لگ رہی ہو لیکن کل جب معاملات اپنی ڈگر پر آجائیں تو انہیں ایسا نہ لگےاور وہ دوبارہ وہ بلاگنگ شروع کر دیں…ان چیزوں کو عورت کے حقوق سے زیادہ انسان کی ذمہ داری کے طور پر دیکھنا چاہیے.

  14. Javed Iqbal Said:

    میں بہن عنیقہ سےبالکل متفق ہوں۔ کیونکہ جب انسان کوکوئی بھی شوق ہوتووہ اس کےلئےوقت نکال ہی لیتاہےاورگھرمیں مصروفیات سےبھی ہفتےمیں ایک آدھ دن وقت نکالاجاسکتاہےباقی یہ آپ کااپناذاتی فیصلہ ہے۔لیکن لکھنےسےآپ کےتجربات سےبہت کچھ سیکھاجاسکےگاجوکہ ہربندےکورب تعالی کی طرف دیاجاتاہےاوراس بندےپرمنحصرہوتاہےکہ وہ اپنےتجرےکاکتنادوسرےکےلئےپیش کرتاہے۔ اللہ تعالی آپ کوہرخوشی دے۔ آمین ثم آمین

  15. امن ایمان پہلے تو شوہر صاحب کا آپ کے پاس آجانا بہت اچھی بات ہے ۔۔۔ کیونکہ دونوں کو مل کر گھر چلانا ہوتا ہے ۔۔۔ رہپی بات لکھنے کی تو شوہر صاحب ہر وقت گھر میں نہیں ہوں گے ۔ بہت سارا وقت متا ہے لکھنے کے لیے ۔۔۔ ایک بچہ ہو تو زیادہ مشکل نہیں ہوتا ۔ہاں بچے زیادہ ہوں اور اسکول جانے والے ہوں تب تھوڑا مشکل ہو جاتا ہے ۔ خاص کر باہر کے ممالک میں جہاں سارے گھر کے کام اپنے زمے ہوتے ہیں ۔ لیکن بلاک کے لیے وقت نکال کر لکھنا مشکل نہیں ہے ، زیادہ سے سے زیادہ ایک گھنٹے کی ضرورت ہوتی ہے ۔۔۔ اور گھر کے علاوہ آپ کی اپنی زات بھی ہے ، جس کو اپ نے اپنی خوشی کے لیے وقت درکار ہو گا۔۔۔

  16. امن۔۔۔ لکھنا یا نا لکھنا۔۔۔ آپکا ذاتی فیصلہ ہے۔۔۔ اور ہم سب کو آپ کے فیصلہ کا احترام کرنا ہو گا۔۔۔

    بے شک آپکے نا لکھنے سے بلاگستان ایک اچھی مصنف سے محروم ہو جائے گا۔۔۔ جب کبھی موقع ملے تو کچھ نا کچھ لکھ کر اپنی موجوگی اور خیریت کا احساس دلاتی رہیے گا۔۔۔

    اللہ آپ کو، نور العین اور آپ کے خاندان میں سب کو اپنے حفظ و امان میں رکھے۔۔۔ آمین۔۔۔

  17. امن کا فیصلہ جو بھی رہا ہو کُچھ دِن پہلے اُن کی ایک پوسٹ کے جواب میں کُچھ لِکھا تھا جو بازُو کے پِھر شدید درد کی وجہ سے موقُوف کر دیا اگر اِجازت ہو تو لِکھ دُوں کہ امن پاری بہنا پیاری نہیں پاری ہی لِکھا ہے جو مُنا سِب لگے وُہ کرو بس کبھی کبھار جھانکی ضرُور لگا لیا کرو کہ اپنے لِئے وقت نِکالنا وُہ بھی اپنے شوق کی وجہ سے کوئ مُشکِل بات نہیں ںہے بس کوشِش کرنے میں کوئ حرج نہیں،،،
    اللہ خُوش رکھے آپ کی چھوٹی سی پیاری فیملی کو ڈھیروں خُوشیاں مِلیں،،آمین
    میں جانتی ہُوں جیسی زِندگی آپ نے اب تک گُزاری ہے جیسے اِس وقت کا اِنتظار کیا ہو گا تو اب سب ایسا ہی گُزارنا چاہتی ہو جیسا آپ نے خواب دیکھا ہو گا ضرُور کرو ویسا ہی لیکِن ہو سکے تو کبھی کبھار ضرُور ہماری لِئے بھی وقت نِکالنا بہُت سا پیار آنکھوں کی ٹھنڈک یعنی نُور العین کے لِئے ،،،ویسے حِبہ نام کب تبدیل کیا،،
    اُمید ہے حِجاب اچھی پیغام رساں بنے گی،،

  18. امن جی
    نہ لکھنا چاہتی ہیں تو نہ لکھیں۔
    جب دل چاھے تو دوبارہ لکھنا شروع کردیجئے گا۔
    اللہ اللہ تے خیر صلا


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: