آخری چند دن دسمبر کے ۔۔۔۔

وہ آخری چند دن دسمبر کے
ہر برس ہی گِراں گزرتے ہیں
خواہشوں کے نگار خانے سے
کیسے کیسے گُماں گزرتے ہیں
رفتگاں کے بکھرے سایوں کی
ایک محفل سی دل میں سجتی ہے
فون کی ڈائری کے صفحوں سے
کتنے نمبر پکارتے ہیں مجھے
جن سے مربوط بے نوا گھنٹی
اب فقط میرے دل میں بجتی ہے
کس قدر پیارے پیارے ناموں پر
رینگتی بدنُما لکیریں سی
میری آنکھوں میں پھیل جاتی ہیں
دوریاں دائرے بناتی ہیں
نام جو کٹ گئے ہیں اُن کے حرف
ایسے کاغذ پہ پھیل جاتے ہیں
حادثے کے مقام پر جیسے
خون کے سوکھے نشانوں پر
چاک سے لائینیں لگاتے ہیں
پھر دسمبر کے آخری دن ہیں
ہر برس کی طرح سے اب کے بھی
ڈائری ایک سوال کرتی ہے
کیا خبر اس برس کے آخر تک
میرے ان بے چراغ صفحوں سے
کتنے ہی نام کٹ گئے ہونگے
کتنے نمبر بکھر کے رستوں میں
گردِ ماضی سے اٹ گئے ہونگے
خاک کی ڈھیریوں کے دامن میں
کتنے طوفان سِمٹ گئے ہونگے
ہر دسمبر میں سوچتا ہوں میں
اک دن اس طرح بھی ہونا ہے
رنگ کو روشنی میں کھونا ہے
اپنے اپنے گھروں میں رکھی ہوئی
ڈائری دوست دیکھتے ہونگے
اُن کی آنکھوں کے خواب دنوں میں
ایک صحرا سا پھیلتا ہوگا
اور کچھ بے نِشاں صفحوں سے
نام میرا بھی کٹ گیا ہوگا۔
××××××( امجد اسلام امجد )×××××

15 تبصرے »

  1. زبردست،،،
    حِجاب کیسا زبردست سچ ہے اور کِتنی تلخ حقیقت بھی جِس نے آنکھوں کو نمکین پانیوں سے بھر دیا ہے،،،

  2. جعفر Said:

    ٓپ نے ہماری چیخیں نکلوانےکا ٹھیکہ لے لیا ہے؟

  3. شگفتہ Said:

    واہ واہ واہ ، بیت بازی کے دن یاد دلا دیے🙂

  4. شگفتہ Said:

    حجاب ذرا ڈائری میں دیکھیں میرا نام 🙂

  5. امتیاز Said:

    بہت خوب ۔۔۔
    ویسے ۳۱ دسمبر رات گیارہ بج کر پچپن منٹ پر بوقت فراق دسمبر جو آپ پوسٹ لکھیں گی وہ پڑھنے کے قابل ہو گی۔۔

  6. بہت خوب!

  7. hijabeshab Said:

    شکریہ شاہدہ آپی ۔۔

    جعفر میری وجہ سے چیخ ماری آپ نے فیس دیں مجھے ۔۔

    شکریہ شگفتہ ، اور آپ کا نام ڈائری میں نہیں دل اور دماغ میں محفوظ ہے 🙂

    شکریہ امتیاز ، ویسے ابھی تک کچھ سوچا تو نہیں ۔۔ ہوسکتا ہے صرف ایک نظم سے کام چلا لوں ۔۔

    شکریہ محمد احمد ۔۔

  8. جعفر Said:

    لوجی ۔۔۔ اب فیس بھی دینی پڑے گے
    وہی ذبح بھی کرے ہے
    وہی لے ثواب الٹا

  9. امن ایمان Said:

    شب میں نے بہت کوشش کرکے دیکھ لی۔۔۔اب کی بار دسمبر مجھے اداس نہیں کررہا : )

  10. hijabeshab Said:

    امن ، ضروری تو نہیں کہ زبردستی اداس ہو جاؤ پاگل لڑکی 🙂 اداس نہیں تو رومینٹک لگا کہ نہیں دسمبر ۔۔

    • امن ایمان Said:

      افففففففففف شب کتنی عجیب بات ہے نا کل سے اب تک بارش کے دوران میں عجیب سا محسوس کرتی رہی لیکن اپنے موڈ کی سمجھ ہی نہیں آئی۔۔۔اور آپ نے کتنی آسانی سے مجھے سمجھا دیا :)۔۔۔سہیلی سہیلی ہی ہوتی ہے🙂

  11. زبردست۔

  12. hijabeshab Said:

    شکریہ احمد عرفان شفقت ۔۔


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: