عیدِ قرباں ۔۔

وقت کس تیزی سے گزرتا ہے ابھی چھوٹی عید گئی تھی اب بقرعید آ گئی ۔۔ عید کوئی سی ہو گھر کی ایکسٹرا صفائی کے ساتھ کچن کے لیئے کچھ اسپیشل ڈشِز کی تیاری اور سجنے سنورنے کے لوازمات ضروری ہوتے ہیں خاص کر خواتین کے لیئے ۔۔ مرد حضرات بھی کم نہیں سجنے سنورنے میں ۔۔ مگر خواتین کی خواہش ہوتی ہے کہ
من کرے آج روپہلی چنری اوڑھوں
شوخ چمکتا تازہ تازہ گجرا پہنوں
مہندی سے ہر پور سجاؤں
جس میں اپنا آپ بساؤں
نین اُٹھا کے ، نین جھکا کے
دھیرے سے مسکاؤں ۔۔۔
کتنا حسین خیال ہے ۔۔ لیکن صرف خیال تک اچھا ہے ۔۔ بقرعید کے دن تو صفائی کرنے ، گوشت تقسیم کرنے ، برتن دھونے ، کھانا بنانے کے بعد صرف ایک ڈسپرین چاہیئے ہوتی ہے تاکہ تھکن نیند میں حائل نہ ہو ۔۔
یہ سب کام صرف ایک مہمانِ خصوصی کے چلے جانے سے بڑھتے ہیں ۔۔ ویسے تو آنے کے بعد بھی گھر اُلٹ پلٹ ہوا نظر آتا ہے ۔۔ ہر طرف بھوسی ، گھاس ۔۔ کہیں پانی کی بالٹی اُلٹی ہوئی ۔۔ ساتھ ہی کچھ ایسے جملے ۔۔ کھا لو پلیز ۔۔ کھا لو ناں ۔۔ ڈائٹنگ پر ہو کیا ۔۔ کیا کھاؤ گے تم ۔۔ اب اگر کسی کو پتہ نہ ہو کہ مہمانِ خصوصی کی آمد ہو چکی ہے تو یہ جملے سُن کر رشک ہی کرے گا بندہ کہ واہ بھئی پتہ نہیں کون ہے جس کے ناز اُٹھائے جا رہے ہیں 🙂
جیسے آج ہمارے مہمانِ خصوصی صاحب جب تشریف فرما ہوئے تو اپنی دُم بھی ساتھ لپیٹ کے بیٹھ گئے ۔۔ اب جب مکھیاں تنگ کریں تو وہ پریشان ۔۔ سر گھمانے سے مکھی اُڑ نہیں سکتی تو لیٹنے کی کوشش کرتا ۔۔ سب نے مل کر اُس کو کہا ( سوائے میرے ) بھائی صاحب دُم نکال لو ۔۔ کھڑے ہو جاؤ تا کہ دُم نکل جائے ۔۔ پھر کہا گیا اس کو ٹینشن ہو رہی ہے دُم کی وجہ سے ۔۔ اور پنکھے سے مکھی اڑائی گئی 🙂
مجھے تو بکرا پیارا لگا ۔۔ کیوٹ سا ۔۔ بکرے کو گھاس کھلا کر ایک شرٹ پہنا دی میں نے 🙂 دل تو چاہ رہا ہے بکرا رکھ لوں ۔۔ مگر صرف دل چاہ رہا ہے میں نہیں ۔۔ ابھی دو دن ہیں باقی ۔۔ اور یہ دو دن میں صرف دیکھتی ہوں خاموشی سے کہ کہاں کتنی بھوسی گِر گئی کہاں گھاس پڑی ہے کہاں کی دیواریں گندی ہوگئیں ۔۔ 2 دن کی خاموشی تو ٹھیک ۔۔ مگر بکرے کو رکھنے کی خواہش کے بعد شائد ہمیشہ خاموش رہنا پڑے اور یہ ہو سکتا ہے کیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کبھی نہیں 😳



Advertisements

11 تبصرے »

  1. ہر بار کی طرح ایک اور خوبصورت سی سادہ سی تحریر۔

  2. عثمان Said:

    اوجی آپ کو صرف بکرا ہی کیوٹ لگتا ہے جی ؟ 😦
    میرا مطلب ہے کہ گائے آنٹی بھی تو کیوٹی ہیں۔ 😛

    اور یہ گائے کی رسی کچھ چھوٹی نہیں کیا ؟ کچھ تو رحم کریں۔ 😦 چہل قدمی کی تھوڑی گنجائش تو ہونی چاہیے۔

  3. عثمان Said:

    او جی سوری
    گائے آنٹی نہیں 😦
    انکل ہیں 😦
    ان کی رسی چھوٹی ہی رہنے دیں۔ 😛

  4. ميرا خيال تھا کہ بکرا لوگ گھر کے باہر باندھتے ہيں ۔ اب پتہ چلا کہ بيٹھک يعنی ڈرائنگ روم ميں رکھتے ہيں

  5. ڈرائنگ روم ۔۔۔۔۔ ارے بکرے کے لئے تو اب ایک بیڈ روم بھی بنوانا چاہئے کیونکہ ان کی قیمتوں کے سامنے بھلا بیڈ کی کیا اہمیت ہے

  6. hijabeshab Said:

    شکریہ سعود بھیّا ۔۔

    عثمان ، بکرا کیوٹ ہے مگر اب ڈھیٹ ہوگیا ۔۔ پیار سے اور پیار بھری ڈانٹ سے بھی نخرے پر زور ہے 🙂 مجھے تو ایک دن میں لگ رہا ہے میں گائے کے باڑے میں ہوں 🙄 اور اب رسّی بڑی کر دی گئی ہے اب یہ صاحب کچن کے دروازے تک جا کے جائزہ لے سکتے ہیں کچن کا 🙂

    اجمل انکل ، یہ ڈرائنگ روم نہیں میرے گھر کا برآمدہ ہے ۔۔ ویسے بیڈ روم میں بھی باندھ سکتے ہیں اس کو ۔۔ اگر میرے بھائیوں کا بس چل جائے 😛 گھر کے باہر باندھ کر نگرانی کون کرے ۔۔۔

    نوید ظفر کیانی ۔۔ ٹھیک کہا آپ نے قیمتی چیزوں کی حفاظت ضروری ہے ۔۔

  7. sarah Said:

    بکرہ واقعی کیوٹ لگ رہا ہے 🙂 گائے بیل سے تو مجھے ڈر لگتا ہے ہرگز نہیں جاتی پاس …

    بکروں گائیوں کی خدمت چاہے دو دن ہی کرنے کے بعد قربانی کے وقت کتنا دکھ ہوتا ہے نہ 😦

  8. sarah Said:

    یہ سمائیلی غلط چلا گیا اوپر والا ہنسنے کے بجائے رونے والا لگ گیا 🙄

  9. ہر عید پر اس بلاگ سے عیدی مل جاتی ہے، خوبصورت سی اور مزیدار سی تحاریر کی شکل میں۔

  10. حج اور عید قرباں مبارک ہو آپ کو
    Happy Hajj and Eid il Adha 2 U

  11. hijabeshab Said:

    شکریہ عادل بھیّا ۔۔ اسمائیلی ٹھیک کر دیا سارہ 🙂


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: