اِک بےنام اداسی ۔۔

9 تبصرے »

  1. عثمان Said:

    کیوں اداس ہیں؟

    • hijabeshab Said:

      ادب کی حد میں ہوں بے ادب نہیں ہوتا۔۔۔۔۔۔۔۔
      تمہارا تذکرہ بھی اب روزوشب نہیں ہوتا ۔۔۔۔۔
      کبھی کبھی تو یونہی چھکل پڑتی ہیں آنکھیں
      اداس ہونے کا کوئی بھی سبب نہیں ہوتا ۔۔۔۔۔

      • عثمان Said:

        سبب تو ہوتا ہے۔ وہ الگ بات ہے کہ بندے کو معلوم نہ ہو۔

  2. لوڈشیڈنگ کی وجہ سے ہو گی یہ اداسی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اچا ر کی ترکیب لکھیں۔
    امید ھے اداسی دور ہو جائے گی۔

  3. عدنان Said:

    بہت اچھا سونگ ہے

  4. شازل Said:

    آپ نے ماحول کو مذید اداس کرنے کی کسر نہیں چھوڑی
    میری بیگم کہہ رہی ہیں کہ یہ کس کے غم میں سن رہے ہو ۔ ۔ ۔ تو میں نے کہا کہ سن نہیں رہا بلکہ کوئی سنوا رہا ہے

  5. hijabeshab Said:

    عثمان ، اگر سبب ہوتا ہے تو پتہ کیوں نہیں ہوتا ؟؟ بات سمجھ نہیں آئی 🙄

    بلاگ پر خوش آمدید عدنان ۔۔

    شازل ، اداسی تو واقعی کل سے چھائی ہے ہر طرف 😦

    • عثمان Said:

      ہمارا موڈ ہمیشہ کسی نہ کسی عمل کے ردعمل میں ہی بدلتا ہے.
      پتا شائد اس لیے نہیں چلتا کہ یا تو عوامل غیر واضح ہوتے ہیں. یا شائد ایک سے ذائد. اس لئے ہم جاننے میں ناکام رہتے ہیں. لیکن من عکاسی ضرور کرتا ہے ان عوامل کے نتیجے میں پیدا ہونے والے اثرات کی. من شائد شعور کے تابع نہیں.

  6. ہم تو جی سپیچ پراسیسر کو ہی سمجھنے میں رہ گئے ۔ ویسے عثمان صاحب عام طور پر ٹھیک ہی کہتے ہیں جی، اگر ہمیں بھی یہی کہتے تو ہم بھی آپ والا ہی جواب دیتے ۔


{ RSS feed for comments on this post} · { TrackBack URI }

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: